لندن سے بڑی گرفتاری کی خبر آ گئی ۔۔۔۔؟

وِکی لیکس ویب سائٹ کے شریک بانی جولین اسانج کو لندن میں واقع ایکواڈور کے سفارت خانے سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

جولین اسانج نے سات سال قبل جنسی زیادتی کا کیس جو بعد میں واپس لے لیا گیا تھا میں سویڈن کے حوالے کیے جانے سے بچنے کے لیے سفارت خانے میں پناہ لی تھی۔

لندن پولیس کے مطابق انھیں کورٹ میں پیش نہ ہونے اور امریکہ کے حوالے کیے جانے کی درخواست پر عمل پیرا نہ ہونے کی وجہ سے گرفتار کیا گیا۔

جولین اسانچ کو اب امریکی حکومت کی سب سے بڑی خفیہ دستاویزات منظر عام پر لانے کا مقدمے کا سامنا ہے۔

برطانیہ ڈیپارٹمنٹ آف جسٹس کی جانب سے عائد کیے جانے والے الزامات کہ اسانچ نے امریکہ کے سابق انٹیلیجینس اہلکار چیلسی مینیگ کے ساتھ مل کر کلاسفیڈ ڈیٹا بیس کو ڈاؤن لوڈ کرنے کی سازش کی اسانچ کی حوالگی کے حوالے سے فیصلہ کرے گا۔

اگر اسانچ کو کمپیوٹر میں مداخلت کرنے کی سازش کرنے کے الزامات کے تحت مجرم قرار دیا گیا تو انھیں امریکہ کی جیل میں پانچ سال کی سزا کا سامنا کرنا ہو گا۔

واضح رہے کہ جولین اسانج کی ویب سائٹس وکی لیکس کی جانب سے بعض خفیہ معلومات شائع کرنے کے سلسلے میں وہ امریکہ کو مطلوب ہیں۔

ان کی وکیل جینیفر رابنسن کا کہنا ہے کہ وہ حوالگی کی درخواست پر مقدمہ لڑیں گے۔


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں