تبدیلی کا نعرہ لیکر حکمران بننے والوں نے عوام کو مایوس کیا۔رپورٹ انصرعباس

لاہور (اہم نیوز)   سیستدان دنیابھر میں دوغلی پالیسیوں ،دھوکے،جھوٹے وعدے اور عوام کی امیدوں پرپورا نہ اترنے کے حوالے سے بدنام ہی رہتے ہیں۔دنیاکاکوئی ملک بھی ایسانہیں ہے جہاں کے سیاستدان الیکشن لڑنے سے قبل جو وعدے کرتے ہیں الیکشن جیت جانے کے بعد ان سے منحرف ہو جاتے ہیں۔سبز باغ دکھانے اور عوام کو لالی پاپ دینے والے سیاستدانوں کی دنیا میں کمی نہیں۔
بظاہر ہیرو بننے اور ملکی سیاست کانقشہ بدلنے والے یہ سیاستدان عوام کی حالت بدلنے میں ہمیشہ ناکام رہے ہیں۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں سینئر صحافی شاہزیب خانزادہ نے ایک ایسے ہی لیڈر کا کچا چٹھا کھولا ہے جس نے عوام کو سہانے سپنے دکھا کر ان سے منہ موڑ لیا۔ایسا ہی ایک لیڈر دنیا کے نقشے پر ابھرا جسے اسلامی ممالک نے فخر کی نگاہ سے دیکھا، الیکشن سے قبل اس نے عوام کی حالت سدھارنے،کرپٹ سیاستدانوں کا احتساب کرنے اور بیرون ملک سے پیسہ واپس لانے کا وعدہ کیا۔
دکھیاری عوام کواس سیاستدان میں مسیحا نظر آیا۔ لہٰذا اس کی مقبولیت یں اضافہ ہونے لگا۔کیونکہ اس کے وعدے اور دعوے عوامی خواہشات اور امنگوں کے عین مطابق تھے نوجوانوں کی اکثریت اس کی طرف زیادہ متوجہ ہوئی اور انہوں نے اس شخص کو اپنا رول ماڈل بنالیا۔ عوام کے جوش نے اسے الیکشن جتوا دیااور وہ ملک کا حکمران بن گیا۔مگر حکمران بنتے ہی اس کی پالیسیوں میں کہیں بھی عوام کے لیے آسانیاں اور سہولتیں نظر نہ آئیں،اس کی معاشی پالیسیاں ناکام ہوئیں اور عوام بھی اپنے محبوب لیڈر کے خلاف ہونا شروع ہو گئے۔
یہ لیڈر اسلامی ملک ملائیشیا کے موجودہ حکمران مہاتیر محمد ہے۔جس نے الیکشن سسے قبل بڑے بڑے وعدے کیے اور اپنے عوام کو سبز باغ دکھائے مگر حکومت میں آنے کے بعدوہ سبھی وعدوں سے منحرف ہو گیا،سابقہ دور میں اس پرکرپشن کے الزام بھی لگے تھے اور وہ پہلے بھی ملائیشیا کا وزیراعظم رہ چکا ہے مگر اب کی بار اس کے نعرے کچھ الگ تھے۔ 2018میں الیکشن جیت کر حکومت میں آنے والا حکمران اس وقت مکمل طور پر ناکام ہو چکااور اس کے جیالے اس سے دور ہوتے جا رہے ہیں۔
ایساہی ایک ماڈل ہمارے ملک پاکستان میں بھی موجود ہے۔ہماری موجودہ حکومت نے بھی کچھ ایسے ہی وعدے اور بلندو بانگ دعوﺅں کے باعث حکومت میں آئی ہے مگر پہلے 9ماہ میں عوام کو ریلیف دینے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔دیکھتے ہیں ہماری حکومت کا مستقبل اور عوام کے حالات کیا رخ اختیار کرتے ہیں


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں