نئی دہلی( اہم نیوز )بھارتی پولیس نےجواہر لال نہرو یونیورسٹی دہلی کی طلبہ یونین کی سابق نائب صدر شہلا رشید کے خلاف بھارتی فوج سے متعلق جھوٹی خبریں پھیلانے کے الزام میں غداری کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔

نئی دہلی( اہم نیوز )بھارتی پولیس نےجواہر لال نہرو یونیورسٹی دہلی کی طلبہ یونین کی سابق نائب صدر شہلا رشید کے خلاف بھارتی فوج سے متعلق جھوٹی خبریں پھیلانے کے الزام میں غداری کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق بھارتی پولیس نے جموں و کشمیر عوامی تحریک کی رہنما اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی دہلی کی طلبہ یونین کی سابق نائب صدر شہلا رشید کے خلاف بھارتی فوج سے متعلق جھوٹی خبریں پھیلانے کے الزام میں غداری کا مقدمہ درج کر لیا ہے،یہ مقدمہ سپریم کورٹ کے وکیل الکھ آلوک شریواستو کی شکایت پر درج کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ شہلا نے بغیر کسی ثبوت فوج پر سنگین الزامات لگائے اور اپنے ٹویٹس کے ذریعے ملک میں فساد برپا کرنے کی کوشش کی،یہ الزام بھی عائد کیا کہ شہلا نے کچھ ایسی باتیں کہی ہیں ’جو کبھی رونما ہی نہیں ہوئیں، شہلا رشید نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے کے بعد کشمیر کے لاک ڈاؤن پر تبصرہ کرتے ہوئے 18 اگست کو ایک ٹویٹ میں لکھا تھا کہ کشمیر میں ‘مسلح فوجی رات میں گھروں میں داخل ہوتے ہیں,وہ لڑکوں کو حراست میں لیتے ہیں, گھر کے سامان کو الٹ پلٹ دیتے ہیں, اناج اور غلے کو فرش پر بکھیر کر اس میں تیل ملا دیتے ہیں۔’

ایک دوسری ٹویٹ میں انھوں نے لکھا تھا کہ’شوپیاں میں چار (کشمیری) لڑکوں کو فوجی کمیپ میں طلب کیا گیا اور ان سے پوچھ گچھ ( ٹارچر) کی گئی, ان کے قریب ایک مائیک رکھا گیا تاکہ پورے علاقے کے لوگ ان کی چیخیں سن سکیں تاکہ انھیں خوفزدہ کیا جا سکے، اس سے پورے علاق‍ے میں خوف کا ماحول پیدا ہو گیا ہے۔

وکیل الکھ شریواستو نے بتایا کہ انھوں نے یہ ٹویٹ پڑھنے کے بعد شہلا کے خلاف پولیس میں ایف آر درج کرائی ہے، اس میں تعزیرات ہند کی دفعہ 124 اے ( غداری ) 153 اے ، 153 اور بعض دوسری دفعات کے تحت مقدمہ درج کرایا گیا ہے۔

Custom Advertisement

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں