انسانی حقوق کمیٹی کے رکن آصف منور نے جھنگ میں اقلیتوں کے کےحقوق بارے بڑا مطالبہ کردیا۔رپورٹ یوسف تبسم

جھنگ ( )سول ہسپتال جھنگ میں پرائیویٹ کمپنی کی طرف سے لیبر قوانین کی مسلسل خلاف ورزی اقلیت سمیت 150سے زائد ملازمین کو عرصہ 2سال سے تنخواہیں 10سے 12ہزار روپے دی جا رہی ہیں جبکہ لیبر نوٹیفکیشن کے مطابق تنخواہ 17ہزار 5سوروپے مقرر کی گئی ہیں ۔آصف منور ضلعی ممبر انسانی حقوق کمیٹی جھنگ نے تمام معاملے کی تحقیق کے بعد رپورٹ صوبائی وزیربرائے انسانی حقوق و اقلیتی امور پنجاب و دیگر اتھارٹیز کو کارروائی کےلئے ارسال کر دی ۔ تفصیلات کے مطابق سول ہسپتال جھنگ میں صفائی ستھرائی کےلئے حکومت پنجاب کی جانب سے ٹھیکہ ایک پرائیویٹ کمپنی کو دیا گیا جس میں اقلیت سمیت مرد خواتین ملازمین عرصہ 2سال سے ملازمت کر رہے ہیں کمپنی کی طرف سے خواتین ملازمین کو تنخواہ 10ہزار روپے ماہانہ اور مرد ملازمین کو 12ہزار روپے ماہانہ ادا کی جاتی ہے ستم ظریفی یہ ہے کہ ملازمین کو سال میں یا ماہانہ کوئی چھٹی بھی نہیں دی جاتی اور اگر کوئی ملازم چھٹی کر بھی لے تو اس کی تنخواہ میں سے اس کی دیہاڑی ڈبل کاٹ لی جاتی ہے جبکہ محکمہ لیبر کے نوٹیفکیشن کے مطابق ہرادارہ ملازمین کو ماہانہ تنخواہ17ہزار5سو روپے دینے کا پابند ہے ۔ کمپنی کا چیف ٹھیکیدار محمد صدام اور سپر وائزر محمد فرحان جو کہ سگے بھائی ہیں اور کئی سالوں سے اس ہونے والی کرپشن میں برابر کے نہ صرف حصہ دار ہیں بلکہ ملازمین کو ڈرانا دھمکانہ،گالی گلوچ کرنا ،غیر اخلاقی و غیر انسانی رویہ اختیار کرنا اور خواتین ملازمین کو ہراساں و پریشان کرنا اور حکم نہ ماننے پر ملازمت سے فارغ کردینا اور ان سے پھر رشوت کے طور پر تنخواہ میں سے حصہ اور کپڑوں کے نذرانے وصول کرنا یہ ان کے معمول میں شامل ہے ۔رپورٹ میں اس انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی روک تھام اور ملازمین کو ان کے حقوق کے تحفظ کےلئے اور لیبر قوانین کی مسلسل خلاف ورزی پر اعلیٰ حکام کو کارروائی کی استدعا کی گئی ہے ۔آصف منور نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے ضلعی سطح پر بننے والی کمیٹیوں کے ممبران کو انسانی حقوق کی پامالیوں پر رپورٹ کرنے اور مسائل کے حل کے لئے ممبران کو ٹاسک فورس کا نام دیا ہے اور حکومت کی طرف سے پہلی بار نچلی سطح پر انسانی حقوق کی پامالیوں کو رپورٹ کرنے اور ان پر کارروائی کےلئے ممبران کو منتخب کیا ہے جو کہ قابل ستائش ہے انسانی حقوق اور لیبر لاءکی سرعام خلاف ورزی کو برداشت نہیں کیا جائے گا بلکہ حکومت کے نوٹس میں دے کر اس کے حل کےلئے دن رات کوشش کی جائے گی ۔انہوں نے اعلیٰ حکام اور ڈی سی جھنگ چیئرمین انسانی حقوق کمیٹی سے مطالبہ کیا ہے کہ اس واقع کا سختی سے نوٹس لیا جائے اور سخت کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ملازمین کے مقدمات لیبر قوانین کے مطابق درج کئے جائیں ۔

Custom Advertisement

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں