معروف صحافی نئی سرکار کےنشانے پر۔رپورٹ انوارالحق مغل

اسلام آباد(انوار الحق مغل)تبدیلی سرکار کے دور میں بھی پرانے پاکستان کے بھرتی افسر نے ذاتی اثر روسوخ استعمال کر کے وزارت مذہبی امور کو مبینہ طور پر یرغمال بنا لیا ہے جبکہ حکومت کی تبدیلی پالیسیاں سرد خانے کی نذر ہونے کی وجہ سے وزارت مذہبی امور میں تبدیلی نہ آسکی۔پاکستان ٹیلی ویژن ”پی ٹی وی“سے وزارت مذہبی امور میں ڈپوٹیشن پرآئے میڈیا ڈائریکٹرعمران صدیقی ڈپوٹیشن پالیسی کے برعکس گزشتہ تین سال سے زائد عرصے سے وزارت مذہبی امور میں ڈائریکٹر کے عہدے پر براجمان ہیں۔ روزنامہ کیپیٹل پوسٹ کو معتبر ذرائع نے بتایا کہ وزارت مذہبی امور کے گریڈ 17کے افسر عمران صدیقی جو گزشتہ تین سال سے زائد عرصے سے میڈیا ڈائریکٹر کی عہدے پر فائز ہیں جن کا تبادلہ تین سال پہلے وزارت مذہبی امور کے سابق میڈیا ڈائریکٹر الطاف ہاشمی کے ریٹائرمنٹ کے بعد میڈیا ڈائریکٹر کے عہدے پر پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) سے ڈپوٹیشن کی بنیاد پر کیا گیا تھا۔ذرائع کا یہ بھی کہنا تھا کہ وزارت مذہبی امور میں میڈیا ڈائریکٹر عمران صدیقی کو ڈپوٹیشن پالیسی کے مطابق اب تک پاکستان ٹیلی ویژن میں واپس جانا تھاجہاں وہ وزارت مذہبی امور میں میڈیا ڈائریکٹر مقرر ہونے سے قبل پروڈیوسر کے طور پر کام کررہے تھے لیکن تین سال سے زائد عرصہ گزرنے پر بھی تاحال انہیں واپس نہیں بھیجا گیا۔ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ عمران صدیقی کو بعض اعلیٰ افسران اور وزراء کی آشیرباد سے ڈپوٹیشن پالیسی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اب تک وزارت مذہبی امور میں میڈیا ڈائریکٹر کے طور پر کام کررہے ہیں ذرائع کا کہناہے کہ موجودہ حکومت نے ڈپوٹیشن پالیسی کے حوالے سے سخت مؤقف اپناتے ہوئے ایسے تمام افسران جو ڈپوٹیشن کے طور پر دوسرے محکموں میں کام کررہے ہیں ان کو واپس بھیجوانے کا اعلان بھی کیا تھا تاہم اس باوجود سات ماہ گزر گئے ہیں وزارت مذہبی امور میں میڈیا ڈائریکٹر کے عہدے پر تعینات عمران صدیقی کی پی ٹی وی واپسی ممکن نہ ہوسکی۔
سائیڈ سٹوری 1
اسلام آباد(سٹی رپورٹر)ڈپوٹیشن تقرری کے حوالے سے جب وزارت مذہبی امور کے میڈیا ڈائریکٹر عمران صدیقی سے روزنامہ کیپیٹل پوسٹ نے مؤقف لینے کیلئے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کیپیٹل پوسٹ کو دھمکاتے ہوئے کہا کہ آپ نے جو کچھ کرنا ہے کرلیں میں خود بھی صحافی ہوں اور سابقہ چیئرمین پیمرا ابصار عالم میرے بھائی ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ میں پہلے صحافی ہوں اور ڈائریکٹر بعد میں ہوں جب ان سے پوچھا گیا کہ سرکاری آفیسر صحافی نہیں ہوسکتا تو وہ آگ بگولہ ہوگئے اور دھمکیوں پر اتر آئے۔ 


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں