مشرف کا جرم بہت بڑا۔۔۔۔۔۔؟ تحریر۔۔ملک ریاست

وکلاء گردی

تحریر ملک ریاست

کل لاہور میں وکلا کی جانب سے بدترین دہشت گردی کامظاہرہ کیا گیا جس میں چار کے قریب شہادتیں ہوئی ہیں، مریضوں کے ساتھ آنے والے لواحقین نے چھپ چھپا کر اپنی جان بچائی ، یاد رہے کہ یہ کوئی حادثہ نہیں تھا، بلکہ پوری پلاننگ سے یہ کام کیا گیا اس لئیے جانبحق افراد کے قتل کا مقدمہ وکلاء پر درج ہونا چاہیے اور انھیں اس بدمعاشی پر کیفرکردار تک پہنچانا چاہیے۔۔۔
واقعہ کی ڈیٹیل میں نہیں جانا چاہتا کہ اس سے پہلے کیا ہوا تھا، مگر جتنا سرچ اور سٹڈی میں نے کیا ساراقصور وکلاء کا ہے، اور پھر ہٹ دھرمی اور لاقانونیت کی انتہاء تو دیکھئیے کہ ” ہم سبق سکھانے گئے تھے” ابے بغیرتو ! یہ بات کرتے ہوئے تمھیں شرم سے ڈوب مرنا چاہیے، تم ہوتے کون ہو سبق سکھانے والے؟ کیا یہ کام اداروں کا نہیں؟ اور ستم ظریفی یہ ہے کہ یہ بات کوئی ان پڑھ جاہل شخص کرے تو بات سمجھ میں آتی ہےمگر قانون کے رکھولوں کی طرف سے ایسا کہنا ان کی جاہلیت ثابت کرتا ہے، اور تمھارے جیسے پڑھے لکھوں پر چار حروف بیھجنا پوری قوم اپنا فرض سمجھتی ہے،
لیکن اس واقعہ کی آڑ میں دو مزید باتیں بھی کرنا چاہتا ہوں ،ایک تو یہ کہ کچھ لوگ کل سے مشرف کے گن گارہے ہیں جو کہ انتہائی غلط ہے، مشرف نے آئین توڑ کر اسے بند الماری میں رکھا اور اس ملک کو اپنے گھر کی لونڈی سمجھ کر چلایا، کیا اس اقدام کی حمایت کی جاسکتی ہے؟ مشرف کاجرم بہت بڑا تھا، برائے مہربانی ایک غلط اقدام پر دوسرے غلط اقدام کو سراہا نہیں جاسکتا، اس کیس میں وکلاء کے کردار کو بھی فراموش نہیں کیا جاسکتا۔۔۔
اور دوسری بات کہ پنجاب میں تین ماہ کے لئیے رینجرز تعینات کردی گئی ہے، رینجرز کی تعیناتی کسی مسئلے کاحل نہیں ہے، پولیس سے اس واقعہ کی رپورٹ طلب کر کے غفلت برتنے والوں کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی کی جائے، پولیس کا کام ہے امن وامان کو برقرار رکھنا، انھی کو کرنا چاہیے اور یہ اس صورت میں ہوسکتا ہے کہ پولیس کو ہرسطح سے غیر سیاسی کرنا چاہیے، تبھی یہ کارگردگی دیکھانے میں کامیاب ہوسکیں گے۔

Custom Advertisement

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں