کیا ڈیل تو نہیں ھو رہی جب یہ سوال مریم نواز اور بلاول بٹھو سے ھوا تو کیا جواب آیا جانئے اس رپورٹ میں

آسلام آباد (اہم نیوز )گزشتہ روز زرداری ہاﺅس میں افطار پارٹی کا اہتمام کیا گیا جس میں تمام اپوزیشن جماعتوں کو مدعو کیا گیا تھا ، نوازشریف اور بینظیر بھٹو کے بعد اب ان کے بچے ایک ساتھ بیٹھے نظر آ رہے ہیں اور میثاق جمہوریت کی طرف پیش رفت دکھائی دے رہی ہے تاہم پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی جانب سے حکومت کو گرانے میں جلد بازی کرنے کی مخالفت کی گئی جبکہ دیگر سیاسی جماعتوں نے احتجاجی تحریک شروع کرنے کی مانگ کی ۔
نجی ویب سائٹ ” 24 نیوز “ پر صحافی نوشین یوسف نے آرٹیکل شائع کیاہے جس میں انہوں نے گزشتہ روز ہونے والی بڑی بیٹھک کی اندرونی کہانی بیان کی ہے ۔انہوں نے اپنے آرٹیکل میں کہا کہ اے این پی کے ساتھ مولانا فضل الرحمان نے بھی یہ موقف اختیا ر کیا کہ اب حکومت کو گرانا لازمی ہو گیاہے تاہم حاصل بزنجو نے کہا کہ اگر اپوزیشن اسمبلیوں سے استعفی دے دے تو حکومت خود بخود گر جائے گی۔
سیاسی بیٹھک میں چھوٹی سیاسی جماعتیں ایک پیج پر نظر آئیں کہ حکومت سے جلد چھٹکارا حاصل کرنا ہی ملکی مفاد میں ہے لیکن سب کی نظریں فیصلے کے لیے مسلم لیگ ن اور میزبان پیپلز پارٹی کی جانب تھیں۔مریم اور بلاول کا خیال تھا کہ اپوزیشن کو حکومت گرانے میں جلد بازی نہیں کرنی چاہیے۔ بلاول بولے کہ ساری جماعتوں کی باتیں ٹھیک ہیں لیکن جلد بازی نہیں کرنی چاہیے۔ مریم نواز بولیں عمران خان خود ایکسپوز ہو رہا ہے اسے خود بے نقاب ہونے دیں۔
یہ ساری گفتگو سننے کے بعد میاں افتخار اور دیگر سیاسی جماعتوں نے مریم نواز اور بلال بھٹوزرداری سے سوال کیا کہ کہیں آپ ڈیل تو نہیں کر رہے ہیں ؟ جس پر مریم نواز اور بلاول نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ وہ کسی قسم کی کوئی ڈیل نہیں کریں گے لیکن یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ جہاں سب نے کھل کر اسٹبلمشنٹ کے خلاف بات کی وہاں مریم نواز نے اور بلاول نے خاموشی اختیار کی ۔


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں