عمران خان سلیکٹڈ ہیں ہمارے پاس ثبوت ہیں، دو ماہ بعدعمران خان کو ہٹا دیا جائےگا، انھیں لانے والے سر پکڑ کر بیٹھے ہیں۔بڑا دعوی سامنے آگیا

کراچی : پیپلز پارٹی کے رہنما نبیل گبول نے دعویٰ کیا عمران خان سلیکٹڈ ہیں ہمارے پاس ثبوت ہیں، دو ماہ بعدعمران خان کو ہٹا دیا جائےگا، انھیں لانے والے سر پکڑ کر بیٹھے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما نبیل گبول نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ایوان میں وزرا کے نہ آنے پر پارٹی چیئرمین کو نوٹس لیناچاہیے، اسپیکر قوائد وضوابط کےتحت ایک جج کی طرح رولنگ دیتا ہے۔

نبیل گبول کا کہنا تھا بتایاجائے سلیکٹڈ کس حیثیت سے غیرپارلیمانی لفظ ہے، ڈپٹی اسپیکرکس طرح سلیکٹڈ لفظ کو کس طرح غیرپارلیمانی کہتے ہیں۔

پی پی رہنما نے دعویٰ کیا عمران خان سلیکٹڈ ہیں اس کے ثبوت موجود ہیں، دوماہ بعد دسمبر میں عمران خان کو ہٹادیاجائے گا، عمران خان کو لانے والے بھی سر پکڑ کر بیٹھے ہیں۔

ان کا کہنا تھا جنوری2020میں عمران خان وزیراعظم نہیں رہیں گے، وزیراعظم ملک کو معاشی بحران سے نکال نہیں پارہے،وزیراعظم عمران خان کو معاشی ٹیم نے چھوڑ دیا ہے۔عمر لڑکیوں کے پاؤں چھونے پر گزاری جب اپنی شادی ھوئی تو سہاگ رات کو کھڑکی سے کود کر خود کشی کر لی ۔ https://ahemnewshd.com/latest/3526

عبدالرزاق داؤد کا بھی استعفیٰ تیار ہے،حفیظ شیخ بھی پریشان ہیں، ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ کو بھی کام نہیں کرنے دیاجارہاہے ، عمران خان بجٹ منظور کرنے کی جلدی میں ہیں پھر ڈالر 165 کا ہوجائے گا۔

دوسری جانب پی ٹی آئی کے رہنما فرخ حبیب نے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا حالات کی وجہ سے پیپلزپارٹی کے پاس خواہشات کےسوا کچھ بچا نہیں، حادثاتی چیئرمین بننےوالا عمران خان کو گھر بھیجنے کی باتیں کررہاہے، نیب کیسز میں آصف زرداری،فریال تالپور گرفتار ہیں، سندھ حکومت کو زرداری لمیٹڈ کمپنی بنادیا گیا ہے۔

فرخ حبیب کا کہنا تھا حکومت کو کوئی مشکل نہیں ،عمران خان اگلے 5 سال بھی وزیراعظم رہیں گے، پیپلزپارٹی اور ن لیگ کا مستقبل جیلوں میں نظرآرہاہے ، انسان مشکل،خوف میں ایسی باتیں کرتا ہے ایسی کوئی بات نہیں۔


Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/ahemnew1/public_html/wp-content/themes/Ahmad Theme/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں